Header Ad

اقسام

سب سے زیادہ مقبول

سب سے زیادہ دیکھا گیا

پاکستان اور لکسمبرگ کے درمیان دو طرفہ سیاسی مشاورت کیلئے اجلاس

پاکستان اور لکسمبرگ کے درمیان دو طرفہ سیاسی مشاورت کا افتتاحی اجلاس لکسمبرگ میں منعقد ہوا۔پاکستان کی جانب سے قائم مقام سیکرٹری خارجہ جوہر سلیم جبکہ لکسمبرگ کی جانب سے وزارت خارجہ اور یورپی امور کے سیکرٹری جنرل جین اولنگر کی قیادت میں اجلاس ہوا۔سفارتی تعلقات کے قیام کی 70 ویں سالگرہ کے موقع پر دوطرفہ سیاسی مذاکرات کی بحالی کا خیرمقدم کرتے ہوئے دونوں فریقوں نے پائیدار اعلیٰ سطحی مصروفیات اور کاروباری مشنوں کے تبادلے کی اہمیت پر زور دیا۔فریقین نے کہا کہ اس مشاورت نے دوطرفہ تعلقات کے تمام پہلوؤں کا جائزہ لینے اور اس پر تبادلہ خیال کرنے کا ایک اہم موقع فراہم کیا، بشمول تجارت و سرمایہ کاری کے تعاون کو بڑھانے کے طریقے اور غیر سبز معیشت میں شراکت داری کو فروغ دینے کے لیے بھی اتفاق کیا۔دونوں فریقوں نے تعلیم، صحت، سائنس اور ٹیکنالوجی کے شعبوں میں تعاون بڑھانے اور اسٹارٹ اپس کے روابط پیدا کرنے پر بھی اتفاق کیا۔پاکستان اور لکسمبرگ کے درمیان دو طرفہ سیاسی مشاورت کیلئے اجلاس قائم مقام سیکرٹری خارجہ نے پاکستان میں غیرمعمولی سیلاب کے متاثرین کی امداد پر لکسمبرگ حکومت کا شکریہ ادا کیا۔انہوں نے لکسمبرگ کو نقصانات کے پیمانے اور ماحولیاتی لچکدار انفرااسٹرکچر کی تعمیر کے لیے درکار کثیر جہتی تعاون کے بارے میں آگاہ کیا۔قائم مقام سیکرٹری خارجہ نے لکسمبرگ کو بھارت کی طرف سے غیر قانونی طور پر مقبوضہ جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں سے آگاہ کیا۔انہوں نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ 5 اگست 2019 کے بھارتی غیر قانونی اور یکطرفہ اقدامات کا مقصد بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ تنازعات کو نقصان پہنچانا تھا، جو IIOJK کے آبادیاتی ڈھانچے کو تبدیل کرنا UNSC کی قراردادوں، چوتھے جنیوا کنونشن اور بین الاقوامی قانون کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے۔اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ افغانستان میں عدم استحکام وسیع تر جغرافیائی مضمرات کے ساتھ خطرات کا باعث بن سکتا ہے۔قائم مقام سیکرٹری خارجہ نے افغانستان اور اس سے باہر دیرپا امن اور استحکام کے لیے عبوری افغان حکومت کے ساتھ بین الاقوامی روابط کو جاری رکھنے کی اہمیت پر زور دیا۔ دونوں فریقین نے یوکرین کی صورتحال پر بھی تشویش کا اظہار کیا۔انہوں نے بین الاقوامی قانون کے اصولوں اور اقوام متحدہ کے چارٹر کے مکمل احترام میں تنازعات کا پرامن حل تلاش کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔دونوں فریقوں نے اقوام متحدہ سمیت مختلف کثیرالجہتی فورمز پر ایک دوسرے کی حمایت کا اعادہ کیا۔یورپی یونین کے اندر دونوں ممالک کے درمیان تعمیری روابط کو جاری رکھنے پر اتفاق کیا گیا۔جوہر سلیم نے کہا کہ پاکستان لکسمبرگ کے ساتھ تعلقات کی توسیع کو خطے اور یورپی یونین میں ایک اہم مقصد سمجھتا ہے۔مشاورت کے افتتاحی دور نے دوطرفہ تعلقات کو مزید گہرا کرنے کی راہوں کی نشاندہی کرنے کا ایک انتہائی ضروری موقع فراہم کیا۔ دونوں فریقین نے باقاعدہ مشاورت کرنے پر اتفاق کیا۔اس موقع پر ان کے ہمراہ یورپین یونین، بیلجیئم اور لکسمبرگ میں پاکستانی سفیر ڈاکٹر اسد مجید خان بھی موجود تھے۔