پاکستان میں تیار ہونے والی گاڑیوں کی قیمت بارے دھماکے دار خبر آگئی ، جان کر آپ یقین نہیں کرینگے

اسلام آباد(یونیوز رپورٹ) ملک میں بننے والی گاڑیوں کی قیمت میں ایک سال کے دوران 39 ہزار روپے سے 6 لاکھ روپے تک اضافہ کر دیا گیا.ڈیلرز کے مطابق جنوری تا دسمبر 2017ء کے دوران ایکس ایل آئی کی قیمت ایک لاکھ 55 ہزار روپے اضافے –> سے 18 لاکھ 19 ہزار روپے کر دی گئی. ڈیلر نے بتایا کہ ہنڈا اکارڈ کی قیمت 6 لاکھ روپے اضافے سے 1 کروڑ 12 لاکھ 67 ہزار

روپے کر دی گئی. مہران سی ایکس آر کی قیمت 39 ہزار اضافے سے 7 لاکھ 42 ہزار روپے ہو گئی.پرانی کاروں کے امپورٹرز کے مطابق قیمتوں میں اضافہ سراسر منافع خوری جبکہ کار مینوفیکچرز کے مطابق روپے کی قدر میں کمی کے سبب قیمت میں اضافہ کیا گیا ہے. (دوبارہ خبر پڑھیں) …………. روپے کر دی گئی. مہران سی ایکس آر کی قیمت 39 ہزار اضافے سے 7 لاکھ 42 ہزار روپے ہو گئی.پرانی کاروں کے امپورٹرز کے مطابق قیمتوں میں اضافہ سراسر منافع خوری جبکہ کار مینوفیکچرز کے مطابق روپے کی قدر میں کمی کے سبب قیمت میں اضافہ کیا گیا ہے. روپے کر دی گئی. مہران سی ایکس آر کی قیمت 39 ہزار اضافے سے 7 لاکھ 42 ہزار روپے ہو گئی.پرانی کاروں کے امپورٹرز کے مطابق قیمتوں میں اضافہ سراسر منافع خوری جبکہ کار مینوفیکچرز کے مطابق روپے کی قدر میں کمی کے سبب قیمت میں اضافہ کیا گیا ہے. …………. روپے کر دی گئی. مہران سی ایکس آر کی قیمت 39 ہزار اضافے سے 7 لاکھ 42 ہزار روپے ہو گئی.پرانی کاروں کے امپورٹرز کے مطابق قیمتوں میں اضافہ سراسر منافع خوری جبکہ کار مینوفیکچرز کے مطابق روپے کی قدر میں کمی کے سبب قیمت میں اضافہ کیا گیا ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں